لاہور  (ویب ڈیسک)

چیف ایگزیکٹو آفیسر پاکستان فرنیچر کونسل (پی ایف سی) میاں کاشف اشفاق نے کہا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے پانچ ماہ کے دوران پاکستان کی فرنیچر کی برآمدات میں گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 206.05 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے یہ بات اتوار کو چوہدری نبیل اور چوہدری ولید کی قیادت میں فرنیچر مینوفیکچررز کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہی جس نے یہاں ان سے ملاقات کی۔ انہوں نے بتایا کہ پانچ ماہ 3645 ملین ڈالر کا فرنیچر برآمد کیا گیا جبکہ گزشتہ سال اسی مدت میں 1191 ملین کی فرنیچر کی برآمدات ہوئی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈیزائنوں میں جدت پسندی کی وجہ سے فرنیچر کی صنعت میں عالمی منڈیوں پر غلبہ حاصل کرنے کی بڑی صلاحیت ہے اور یہ برآمدات کے فروغ میں نمایاں کردار ادا کر سکتی ہے۔ تاہم اس کی برآمدات کو مزید بڑھانے کے لیے مراعات اور سہولیات کے پیکج کی اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے برآمدات میں اضافہ کے لیے نئی بین الاقوامی منڈیوں کی تلاش کی فوری ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستانی مصنوعات میں بہت زیادہ پوٹینشل موجود ہے۔ اگر حکومت فرنیچر کمپنیوں کو تعاون فراہم کرے تو آئندہ پانچ سال میں برآمدات کا حجم 5 ارب ڈالر تک پہنچ سکتا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ وزیراعظم عمران خان کی متحرک قیادت میں آنے والے دنوں میں فرنیچر کا شعبہ ترقی کرے گا اور پھلے پھولے گا۔ انہوں نے کہا کہ تاجر برادری نے عمران خان کی سربراہی میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت سے بہت امیدیں وابستہ کر رکھی ہیں اور موجودہ حکومت بھی برآمدات کے حجم کو بڑھانے کے لیے تاجروں کو تمام سہولیات فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

By Editor