عمان کے تجارتی وفد کا اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ
عمان پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ہے۔ انجینئر ریدھا الصالح
دونوں ممالک متعد د شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کر سکتے ہیں۔ جمشید اختر شیخ
اسلام آباد (ویب نیوز  )

عمان کے ایک تجارتی وفد نے عمان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئرمین انجینئر ریدھا الصالح کی قیادت میں اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اور پاکستانی ہم منصبوں کے ساتھ کاروباری تعاون کے مواقع تلاش کرنے کیلئے بی ٹو بی میٹنگز کیں۔ وفد میں ٹریڈ، امپورٹ و ایکسپورٹ، تیل و گیس، رئیل اسٹیٹ، ٹیکسٹائل و گارمنٹس، سیاحت، آئی ٹی اینڈ ٹیلی کام، زراعت، فیبریکیشن اور فیشن ڈیزائننگ سمیت دیگر شعبوں کے نمائندگان شامل تھے۔ پاکستان میں تعینات عمان کے سفیر الشیخ محمد المرحون اور. عمان میں تعینات پاکستان کے سفیر کے کے احسن واگن بھی اس موقع پر موجود تھے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے عمان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئرمین انجینئر ریدھا الصالح نے کہا کہ پاکستان اور عمان کی باہمی تجارت اس وقت تقریبا پچاس کروڑ ڈالر تک ہے جو دونوں ممالک کی اصل صلاحیت سے بہت کم ہے لہذا دونوں ممالک باہمی تجارت کو کم از کم ایک ارب ڈالر تک بڑھانے کی کوشش کریں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے جغرافیائی محل وقوع ان کو کاروباری اور سرمایہ کاری کے تعلقات کو بہتر کرنے کے عمدہ مواقع فراہم کرتے ہیں کیونکہ عمان پاکستان کے لیے خلیجی ممالک، افریقہ اور دیگر علاقائی مارکیٹوں تک آسان رسائی فراہم کر سکتا ہے جبکہ پاکستان عمان کو وسطی ایشیا، چین اور دیگر علاقائی ممالک تک آسان رسائی فراہم کر سکتا ہے لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ دونوں ممالک قریبی تعاون کے فروغ پر توجہ دیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے پاکستانیوں نے عمان میں سرمایہ کاری کی ہوئی ہے اور پاکستان کے مزید سرمایہ کار عمان میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کریں کیونکہ عمان اب غیر ملکی سرمایہ کاروں کو 100 سرمایہ کاری کی اجازت دیتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہت سی پاکستانی مصنوعات ہمسایہ ممالک کے راستے عمان پہنچ رہی ہیں لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بہتر فوائد کے حصول کے لیے دونوں ممالک براہ راست تجارت کو فروغ دینے کی کوشش کریں۔ انہوں نے تجارتی تعلقات کو بہتر بنانے کے لیے پاک عمان بزنس کونسل کو دوبارہ فعال کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔
اپنے استقبالیہ خطاب میں اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر جمشید اختر شیخ نے عمان کے وفد کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور عمان زراعت، چاول، سمندری غذا، گوشت، سبزیاں، پھل، ڈیری مصنوعات، فارماسیوٹیکل، ٹیکسٹائل، سوتی دھاگے، تعمیرات اور پیٹرو کیمیکل سمیت کئی شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کر سکتے ہیں جن سے فائدہ اٹھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ گوادر اور سلالہ بندرگاہیں دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تعلقات کو فروغ دینے کے عمدہ مواقع فراہم کر سکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمان کے تجارتی وفد کا دورہ دونوں ممالک کے نجی شعبوں کے درمیان کاروباری روابط کو بہتر بنانے کے لیے ایک مثبت اقدام ہے۔ انہوں نے زور دیا کہ دونوں ممالک باہمی تعاون کے تمام ممکنہ شعبوں سے فائدہ اٹھانے کے لیے باقاعدگی کے ساتھ تجارتی وفود کا تبادلہ کرنے کی حوصلہ افزائی کریں۔
پاکستان میں تعینات عمان کے سفیر الشیخ محمد المرحون نے اپنے خطاب میں کہا کہ ان کا ملک پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ہے کیونکہ دونوں ممالک باہمی فائدے کے لیے متعدد شعبوں میں تعاون کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک پاکستانی بندرگاہوں کو عمان، دبئی اور دیگر علاقائی ممالک سے منسلک کرنے کے لیے فیری سروس شروع کرنے پر بات چیت کر رہے ہیں جس سے دو طرفہ تجارت کے فروغ کے مزید مواقع پیدا ہوں گے۔
عمان میں تعینات پاکستان کے سفیر کے کے احسن واگن نے کہا کہ پاکستان کی موجودہ حکومت بیرونی ممالک کے ساتھ تجارتی اور اقتصادی تعلقات کو مضبوط کرنے کے لیے جیو اکنامک حکمت عملی پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے اور امید ظاہر کی کہ عمان کے تجارتی وفد کا پاکستان کا دورہ دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ تجارتی تعلقات کو بہتر کرنے کی طرف ایک مثبت پیش رفت ثابت ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے سفارتخانے پاکستان اور عمان کے کاروباری افراد کے درمیان روابط کو فروغ دینے کے لیے ہم آہنگی سے کام کرتے رہے گے۔
آئی سی سی آئی کے نائب صدر محمد فہیم خان نے عمان کے تجارتی وفد کا اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کرنے پر شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ ان کے دورہ پاکستان سے دونوں ممالک کے درمیان پائیدار بزنس پارٹنرشپس کو فروغ ملے گا۔آئی سی سی آئی کے ممبران کی ایک بڑی تعداد نے میٹنگ میں شرکت کی اور عمان کے تجارتی وفد کے ساتھ بی ٹو بی میٹنگ منعقد کیں۔

By Editor