پاکستان اور افغانستان کے مابین باہمی تجارت کو فروغ کی وسیع گنجائش موجود ہے۔ محمد شکیل منیر
پاکستان کے سرمایہ کار افغانستان میں سرمایہ کاری اور جوائنٹ وینچرز کے مواقع تلاش کریں۔ محترمہ فائزہ

اسلام آبا د (ویب نیوز  ) پاکستان وافغانستان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، پاکستان چیپٹر کی سیکرٹری جنرل محترمہ فائزہ نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اور چیمبر کے صدر محمد شکیل منیر کے ساتھ پاکستان اور افغانستان کے درمیان باہمی تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مزید بہتر کرنے کے امور پر تبادلہ خیال کیا جس سے دونوں ممالک میں خوشحالی آئے گی۔ جمشید اختر شیخ سینئر نائب صدر، باصر داؤد سابق صدر آئی سی سی آئی، صبور ملک ڈائریکٹر پاکستان پاک افغان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔
اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد شکیل منیر نے کہا کہ بعض رپورٹس کے مطابق پاکستان اور افغانستان کے درمیان باہمی تجارت کو سالانہ 8 سے 10 ارب ڈالر تک بڑھایا جا سکتا ہے لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ دونوں ممالک نجی شعبوں کے ساتھ بھرپور تعاون کریں تا کہ باہمی تجارت کی اس وسیع صلاحیت سے فائدہ اٹھایا جا سکے۔ انہوں نے مزید کہا دونوں ممالک باہمی مشاوت سے دوطرفہ تجارت کی راہ میں حائل تمام رکاوٹوں کو دور کرنے کی کوشش کریں جس سے باہمی تجارت میں نمایاں بہتری آئے گی۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ طور خم بارڈر پر سکینرز کی تعداد میں اضافہ کیا جائے تاکہ تجارتی مال کی ہینڈلنگ میں تیزی لائی جا سکے۔
آئی سی سی آئی کے صدر نے کہا کہ پاکستان ماربل و گرینائٹ، سٹیل، سیمنٹ، اینٹیں، کھانے پینے کی اشیاء، ادویات، بجلی کا سامان، کپڑے اور پھلوں و سبزیوں سمیت اپنی متعدد اشیاء افغانستان کو برآمد کر سکتا ہے جبکہ پاکستان افغانستان سے تازہ اور خشک میوہ جات سمیت دیگر مصنوعات درآمد کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان کو باقی دنیا تک رسائی حاصل کرنے کیلئے مختصر اور سستا رابطہ فراہم کرتا ہے جبکہ افغانستان پاکستان کو وسطی ایشیائی مارکیٹوں تک آسان رسائی فراہم کرتا ہے لہذا باہمی قریبی تعاون دونوں ممالک کے لیے بہت سود مند ثابت ہوگا۔ انہوں نے یقین دلایا کہ آئی سی سی آئی پاکستان اور افغانستان کے درمیان دو طرفہ تجارتی حجم کو بڑھانے کے لیے پاک افغان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے تیار ہے۔
محترمہ فائزہ، سیکرٹری جنرل، پاکستان افغانستان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے پاکستان اور افغانستان کی باہمی تجارت کو بہتر بنانے کیلئے اپنے چیمبر کے صدر کا وژن آئی سی سی آئی کے صدر کے ساتھ شیئر کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت، سرمایہ کاری اور مشترکہ کاروباری شراکتوں کو فروغ دینا ان کے چیمبر کی اہم ترجیح ہے اور ان اہداف کے حصول کے لیے آئی سی سی آئی کا تعاون ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کو اپنے تجارتی اور صنعتی ڈھانچے کو مزید بہتر بنانے اور اپ گریڈ کرنے کی ضرورت ہے لہذا پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے یہ اچھا موقع ہے کہ وہ افغانستان میں سرمایہ کاری اور جوائنٹ وینچرز کے مواقع تلاش کریں۔ انہوں نے یقین دلایا کہ ان کا چیمبر ایسی کوششوں میں پاکستان کی تاجر برادری کو ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کیلئے تیار ہے۔ دونوں فریقوں نے اس موقع پر باہمی طور پر فائدہ مند نتائج کے حصول کے لیے دونوں ممالک کے درمیان تجارتی اور اقتصادی تعلقات کو وسعت دینے کے لیے متعدد دیگر آپشنز پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

By Editor