انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام کیلئے حکومت چیمبر کے ساتھ تعاون کرے گی۔ صالح محمد خان سواتی
حکومت سنگل ٹیکس نظام رائج کر کے ٹیکس ریونیو میں نمایاں بہتری لا سکتی ہے۔ محمد شکیل منیر

اسلام آباد (ویب نیوز )

صالح محمد خان سواتی، پارلیمانی سیکرٹری، وزارت آبی وسائل نے یقین دلایا کہ حکومت اسلام آباد کیلئے ایک نئی انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام کی کوششوں میں آئی سی سی آئی کے ساتھ تعاون کرنے کی کوشش کرے گی کیونکہ اس سے صنعت کاری اور سرمایہ کاری کو بہتر فروغ ملے گا، روزگار کے مزید مواقع پیدا ہوں گے اور علاقائی برآمدات میں بہتری آئے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دورے کے موقع پر تاجر برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔
صالح محمد خان سواتی نے سنگل پوائنٹ پر ٹیکس کے نفاذ اور ٹیکس کی شرح کو کم کرنے کے بارے میں آئی سی سی آئی کی تجاویز سے اتفاق کیا کیونکہ اس سے ٹیکس کی بنیاد کو وسیع کرنے اور ٹیکس ریونیو کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کاروباری برادری کو وزارت آبی وسائل کی طرف سے پانی کے تحفظ اور پاکستان کو پانی کی بچت کرنے والا ملک بنانے کی کوششوں سے بھی آگاہ کیا۔


اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد شکیل منیر نے کہا کہ موجودہ ٹیکس نظام کافی پیچیدہ ہے لہذا حکومت سنگل ٹیکس نظام متعارف کرانے کی کوشش کرے جس سے ٹیکس ریونیو میں نمایاں بہتری آئے گی۔ انہوں نے وفاقی دارالحکومت میں ایک نئی انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام کی اہمیت پر روشنی ڈالی او ر صالح محمد خان سواتی کو اس منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے آئی سی سی آئی کی کوششوں سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس منصوبے کو عملی شکل دینے میں آئی سی سی آئی کے ہرممکن تعاون کرے جس سے معیشت کیلئے متعدد فوائد پیدا ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی کی وجہ سے عام آدمی کی مشکلات بڑھ رہی ہیں جبکہ صارفین کی قوت خریدکم ہونے سے کاروباری سرگرمیاں بھی ماند پڑ رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مہنگائی پر قابو پانے کے لیے فوری اقدامات کرے جس سے کاروبار بھی بہتر فروغ پائے گا۔انہوں نے کہا کہ اسٹیٹ بینک کو چاہیے کہ وہ پالیسی شرح سود میں مناسب کمی کرے کیونکہ شرح سود میں اضافے سے بینکوں کے قرضے مزید مہنگے ہو گئے ہیں جس کی وجہ سے موجودہ کاروبار کو وسعت دینا اور نئی سرمایہ کاری کرنا مشکل ہو گیا ہے۔
جمشید اختر شیخ سینئر نائب صدر اور محمد فہیم خان نائب صدر آئی سی سی آئی نے کہا کہ متعدد مراحل پر ٹیکس کا نفاذ کاروبار اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے میں اہم رکاوٹ ہے لہذا انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ ٹیکس ریونیو کو بہتر بنانے اور کاروباری سرگرمیوں کے بہتر فروغ کے لیے ایک ہی مرحلے پر ٹیکس نافذ کرنے پر غور کرے۔
چودھری محمد علی، اظہر الاسلام، جاوید اقبال، حافظ بلال منیر، عمیس خٹک اور دیگر نے بھی اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا اور معیشت کے اہم مسائل کے حل کے لیے مفید تجاویز پیش کیں۔

By Editor