لاہور  (ویب ڈیسک)

تاجر رہنما  و پاکستان سٹون ڈویلپمنٹ کمپنی کے بور ڈ آف ڈائریکٹرز کے رکن خادم حسین سینئر نائب صدر فیروز پور بورڈ وسابق یگزیکٹو ممبرلاہور چیمبرز آف کامرس  نے اقتصادی رپورٹ پر تشویش کا اظہار کیا ہے جس کے مطابق رواں مالی سال 2021-22کے پہلے پانچ ماہ(جولائی تا نومبر) کے دوران ملک کا کرنٹ اکائونٹ خسارہ بڑھ کر 5.3اضافے کے ساتھ7ارب10کروڑ ڈالر ہوگیا ہے جو گزشتہ سال اسی عرصے میں منفی 1.6فیصد تھا۔انہوںنے کہا کہ ملکی برآمدات میں28.9فیصد جبکہ درآمدات64.4فیصد ریکارڈ کی گئی 12.3ارب کی برآمدات کے مقابلہ میں درآمدات کا حجم29.9فیصد رہا کرنٹ اکائونٹ خسارہ کو کنٹرول کرنے کیلئے غیر ضروری درآمدات کو کنٹرول کیا جائے اور برآمدات میں اضافہ کیلئے موثر حکمت عملی اختیار کی جائے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے فیروز پور بورڈ کے تاجروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔خادم حسین نے کہا کہ تجارتی خسارہ میں کمی اوربرآمدات کا ہدف پورا کرنے کیلیء صنعتی شعبہ کی پیداواری لاگت میں کمی لائی جائے ۔  برآمدات کی بحالی اور توسیع کے سلسلہ فوری اقدامات کی ضرورت ہے اس ضمن میں  پاکستانی مصنوعات کے لیے بیرون ملک نئی منڈیوں کی تلاش اور بیرون ملک سفارتخانوں کو فعال  کیا جائے تاکہ وہ بیرون ملک پاکستانی مصنوعا ت کی کھپت اور برآمدات میں اضافہ کیلئے اپنا اہم کردار ادا کریں ۔ انہوںنے کہا کہ صنعتی شعبہ کی پیداواری لاگت میں کمی لائی جائے تاکہ پاکستانی اشیاء کی بیرون ملک کھپت میں اضافہ سے برآمدات میں اضافہ اور تجارتی خسارہ میں کمی ہوسکے۔

By Editor